کشمیر

جموں و کشمیر میں تعینات سیکورٹی اہلکاروں میں خودکشی کا بڑھتا رجحان، 12 دنوں میں 5 اہلکاروں کی خود کشی

سری نگر۔ شمالی ضلع کپوارہ کے ہندوارہ میں تعینات سشستر سیما بل کے ایک جوان نے مبینہ طور پر اپنے آپ پر گولی چلا کر خود کشی کر لی ہے۔ مبینہ خود کشی کا یہ واقعہ ولگام ہندوارہ میں واقع ایس ایس بی کیمپ میں اتوار اور پیر کی درمیانی رات کو پیش آیا ہے۔ جموں و کشمیر میں ماہ رواں کے دوران بھارتی فوج یا پیرا ملٹری فورسز کے کسی اہلکار کی خود کشی کا یہ پانچواں واقعہ ہے۔ یعنی محض 12 دنوں کے دوران کم از کم پانچ سکیورٹی اہلکاروں نے خود کشی جیسا سنگین اقدام اٹھا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کیا ہے۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ہندوارہ کے ولگام میں قائم ایس ایس بی کیمپ میں تعینات پیرا ملٹری جوان امت کمار نے گذشتہ رات دیر گئے خود پر گولی چلا کر اپنی زندگی کا خاتمہ کر لیا۔ انہوں نے کہا کہ پولیس نے معاملے میں کیس درج کر کے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہو پایا ہے کہ مذکورہ جوان نے یہ انتہائی سخت قدم کیوں اٹھایا ہے۔ جموں و کشمیر کے حالات پر گہری نظر رکھنے والے مبصرین کا کہنا ہے کہ سکیورٹی فورسز اہلکاروں میں خودکشی کے بڑھتے ہوئے رجحان کی وجہ سخت ڈیوٹی، اپنے عزیز و اقارب سے دوری اور گھریلو و ذاتی پریشانیاں ہیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Open chat
Need help ?