اہم خبریں

سعد رضوی کیس قانونی طریقے سے گزرے گا، وزیر داخلہ

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے واضح کیا ہے کہ کالعدم تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ سعد حسین رضوی کیس سمیت 201 ایف آئی آرز قانونی طریقے سے گزریں گے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر داخلہ نے کہا کہ کالعدم ٹی ایل پی نے کسی کی رہائی کی بات نہیں کی بلکہ صرف ایم پی او کے تحت گرفتار افراد کو رہا کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ معاہدے کے تحت حراست میں لیے گئے 733 افراد میں سے 669 کو رہا کر دیا گیا جبکہ یرغمال 12 لوگ 19 اپریل کی رات کو ہی واپس کر دیے تھے۔ کالعدم قرار دی گئی تنظیم نے 30 دن میں جواب داخل کرنا ہے۔

شیخ رشید نے کہا کہ مذاکرات کے بعد ٹی ایل پی کے ساتھ معاملات طے پائے گئے اور اسی سلسلے میں قرارداد قومی اسمبلی ميں پيش کی گئی جس میں فرانسيسی سفير کو ملک بدر کرنے کا حوالہ ہے۔ وزیراعظم نے مسلم سربراہان کو خطوط بھی لکھے۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ ملک ميں حکومت کی رٹ قائم کريں گے۔ رينجرز اور پوليس نے زبردست کام کيا انہیں خراج تحسين پيش کرتا ہوں۔

گزشتہ روز قومی اسمبلی میں پیش آئے واقعے پر شیخ رشید نے کہا کہ لگتا ہی نہیں شاہد خاقان عباسی وزیراعظم رہے ہیں، انھوں نے بدترین زبان استعمال کی۔ ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ برطانوی ہائی کمیشن سے کہا ہے کہ نوازشریف کو ڈی پورٹ کریں۔

کالعدم تحریک لبیک پاکستان نے دھرنا ختم کردیا

واضح رہے کہ منگل 20 اپریل کو کالعدم تحریک لبیک نے قومی اسمبلی میں قرارداد پیش ہونے کے بعد لاہور کے ملتان روڈ پر جاری مرکزی دھرنا ختم کر دیا۔

قومی اسمبلی سے منظور کی گئی قرارداد

قرارداد کے متن کے مطابق ایوان متنازعہ فرانسیسی میگزین چارلی ہیپڈو کی طرف سے یکم ستمبر 2020 کو ناموس رسالت کی گستاخی اور توہین آمیز خاکوں کی اشاعات کی پرزور مذمت کرتا ہے۔

قرارداد میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ فرانسیسی سفیر کو ملک سے نکالنے کے معاملہ پر بحث کی جائے، تمام یورپی ممالک بالخصوص فرانس کو معاملے کی سنگینی سے آگاہ کیا جائے اور تمام مسلم ممالک سے معاملے پر سیر حاصل بات کی جائے اور اس مسئلے کو اجتماعی طور پر بین الاقوامی فورمز پر اٹھایا جائے۔

ایوان میں یہ بھی مطالبہ کیا گیا کہ بین الاقوامی تعلقات کے معاملات ریاست کو طے کرنا چاہیئے اور کوئی فرد، گروہ یا جماعت اس حوالے سے بے جا غیرقانونی دباؤ نہیں ڈال سکتا۔

اسکے علاوہ صوبائی حکومتیں تمام اضلاع میں احتجاج کے لیے جگہ مختص کریں تا کہ عوام الناس کے روزمرہ کے معمولات زندگی میں کسی قسم کی کوئی رکاوٹ نہ آئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Open chat
Need help ?