تازہ ترین

شہباز گل کو انڈہ مارنے والی خاتون کو عدالت سے باہر نکال دیا گیا

سیکیورٹی سٹاف کا کہنا ہے امن و امان کی صورتحال کے پیش نظر خاتون کو عدالت سے باہر نکالا ، خاتون نے بھی عدالت آںے کی وجہ بتا دی

معاون خصوسی ڈاکٹر شہباز گل کو انڈہ مارنے والی خاتون کو عدالت سے نکال دیا گیا، خاتون نے بھی عدالت آںے کی وجہ بتا دی۔تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے سکیورٹی سٹاف نے ن لیگ کی خاتون کارکن کو احاطہ عدالت سے باہر نکال دیا۔ذرائع کے مطابق جس خاتون کو احاطہ عدالت سے باہر نکالا گیا ان پر کچھ عرصہ قبل وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل پر انڈہ پھیکنے کا الزام عائد ہے۔
سیکیورٹی اسٹاف کا اس موقع پر کہنا تھا کہ امن و امان کی صورتحال کے پیش نظر خاتون کو عدالت سے باہر نکالا ہے۔ جب کہ خاتون نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ میں پارٹی قیادت سے ملنے کے لیے عدالت آئی ہوں، 15 مارچ2021ء کو وزیراعظم کے معاون خصوصی شہباز گل پر انڈے اور سیاہی پھینکنے والی خاتون سمیت لیگی کارکنان کوپولیس نے گرفتار کیا تھا۔
وزیراعظم کے معاون خصوصی شہباز گل پیشی کیلئے لاہور ہائیکورٹ پہنچے جہاں لیگی کارکنان پہلے سے موجود تھے جن میں موجود ایک شخص نے ان پر دو انڈے پھینکے۔

اس دوران تحریک انصاف کے کارکنوں نے انڈے مارنے والے شخص کو پکڑ کر تشدد کا نشانہ بھی بنایا جسے بعد میں پولیس نے اپنی حراست میں لے لیا۔ اس دوران ایک خاتون نے بھی احتجاج کرتے ہوئے ‘آٹا چور’ اور ‘چینی چور’ کے نعرے لگائے اور شہبازگل پر سیاہی پھینک دی ۔پولیس نے ان کو موقع سے گرفتار کر لیا۔شہبازگل نے کہاکہ انہوں نے اپنے کالے کرتوتوں کی سیاہی پھینکی ہے مگر وہ بالکل ٹھیک ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ غنڈہ گردی ہے،ہم ایک تھپڑکے جواب میں دس تھپڑ نہیں ماریں گے،ایک گالی کے جواب میں دس گالیاں بھی نہیں دیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ ہم غنڈہ گردی کی تربیت نہیں دیں گے، سیاست کریں گے۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Open chat
Need help ?