تازہ ترین

لاہور میں 22 روز بعد میٹرو اور سپیڈو بس سروس بحال ، اورنج لائن کا فیصلہ نہ ہوسکا

22 روز کی بندش کے باعث ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کو کرائے کی مد میں 12 کروڑ 5 لاکھ روپے کا خسارہ ہوا

صوبہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں چلنے والی میٹرو اور سپیڈو بس سروس کو 22 روز بعد بحال کردیا گیا تاہم اورنج لائن کی بحالی کا فیصلہ نہ ہوسکا۔ تفصیلات کے مطابق عالمی وباء کورونا وائرس کی تیسری لہر میں جزوی لاک ڈاؤن کے سبب شہر لاہور میں 30 مارچ کو بند کیے گئے ماس ٹرانزٹ سسٹم کو بحال کردیا گیا ہے اس حوالے سے محکمہ پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ نے مراسلہ بھی جاری کر دیا ہے ، جس کے مطابق لاہور میں 22 دن بعد میٹرو اور سپیڈو بس سروس بحال کر دی گئی ہے تاہم اورنج ٹرین کی بحالی سے متعلق تاحال کوئی فیصلہ نہ ہوسکا۔
میڈیا رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ 22 روز کی بندش کے باعث ماس ٹرانزٹ اتھارٹی کو کرائے کی مد میں 12 کروڑ 5 لاکھ روپے کا خسارہ ہوا ، جن میں سے میٹرو بس کی بندش سے اتھارٹی کو 7 کروڑ 92 لاکھ روپے نقصان ہوا جب کہ اورنج لائن ٹرین کی بندش سے اتھارٹی کو 4 کروڑ 13 لاکھ 60 ہزار روپے آمدن کی مد میں خسارے کا سامنا کرنا پڑا کیوں کہ ماس ٹرانزٹ سسٹم لاک ڈاؤن کے سبب 22 دن تک مکمل بند رہا ،اس دوران سپیڈو بس کے 17 روٹس کو بھی معطل رکھا گیا جس کی وجہ سے سپیڈو بس سروس کی 200 بسیں متعلقہ لاری اڈوں پر کھڑی رہیں ، اس کے علاوہ شاہدرہ سے گجومتہ چلنے والی میٹرو بس سروس بھی معطل رہی اور لاک ڈاؤن کے دوران میٹرو بس کے سٹیشنز پر ٹکٹنگ کا نظام بند رہا اور میٹرو بس ٹریک پر چلنے والی 67 بسیں گجومتہ بس ڈپو میں کھڑی رہیں جب کہ اورنج ٹرین کی سروس کو بھی 22 روز تک کورونا کے بڑھتے کیسز کے مدنظر بند رکھا گیا جس کی بحالی کا تاحال بھی کوئی فیصلہ نہیں ہوسکا۔
خیال رہے کہ پنجاب حکومت نے لاہور میں پبلک ٹرانسپورٹ چلانے کی اجازت دے دی ، جس کے باعث ، میٹروبس، اور اسپیڈو بس سروس کو بحال کیا گیا ہے ، ٹرانسپورٹ نظام کو کورونا پھیلاؤ کے باعث معطل کیا گیا تھا جس کے بعد اب پنجاب حکومت نے پبلک ٹرانسپورٹ بحال کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے ، جس کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا جس کے تحت میٹروبس اور اسپیڈو بس سمیت تمام پبلک ٹرانسپورٹ آج سے بحال ہوجائے گی تاہم پبلک ٹرانسپورٹ کو ایس او پیز کے تحت بحال کیا جائے گا۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Open chat
Need help ?