پاکستان

موٹروے ریپ کیس کا مرکزی ملزم عابد گرفتار

سیالکوٹ لاہور موٹروے پر خاتون کا گینگ ریپ کرنے میں ملوث مرکزی ملزم عابد ملہی کو پولیس نے گرفتار کرلیا۔ ملزم کا دوسرا ساتھی شفقت پہلے ہی گرفتار ہوچکا ہے۔

پولیس نے گرفتاری کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملزم بھیس بدل کر فیصل آباد میں چھپا ہوا تھا۔ اب پولیس کی ایک ٹیم ان کو فیصل آباد سے لاہور منتقل کر رہی ہے۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی شہباز گل نے بھی سماء ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے تصدیق کی کہ ملزم پکڑا گیا ہے اور پولیس کو اس کی شاباس دینی چاہیے۔ اس گرفتاری کے ساتھ ساری سازشی کہانیاں دم توڑ جائیں گی۔

شہباز گل نے کہا کہ عابدملہی فیصل آباد میں کیسے رہ رہا تھا اور پولیس اس تک کیسے پہنچی، اس پر پولیس حکام روشی ڈالیں گے مگر ملزم کو ‘پاکستان کے قانون کے مطابق’ سزا ملے گی۔

سنیئرقانون دان اور سپریم کورٹ بار کے سابق صدر کامران مرتضیٰ نے کہا کہ سرعام پھانسی کی سزا پاکستان کے قانون میں موجود نہیں۔ قانون کے مطابق ریاست کسی بھی شہری کو غیرقانونی سزا نہیں دے سکتی۔ یہ ملزم بھی پاکستان کا شہری ہے اور اس کو بھی قانونی حقوق حاصل ہیں۔

کامران مرتضیٰ نے کہا کہ سرعام سزائے موت دینے کے لیے پہلے قانون میں ترمیم کرنا ہوگی۔

یاد رہے کہ 9 ستمبر کی رات کو فرانس سے چھٹیوں پر پاکستان آئی خاتون اپنے کم سن بچوں کیساتھ لاہور سے براستہ سیالکوٹ موٹروے گجرانوالہ جا رہی تھی۔ راستے میں پیٹرول ختم ہوا تو خاتون نے گاڑی روک دی۔ اس دوران 2 ملزمان آئے اور خاتون کو بچوں سمیت قریبی کھیتوں میں لے گئے۔

ملزمان نے پہلے خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا اور جاتے ہوئے قیمتی سامان بھی چھین کر فرار ہوگئے، جس میں ایک لاکھ نقدی، زیورات اور ڈیبٹ کارڈ و دیگر اہم اشیا شامل تھیں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Open chat
Need help ?